आर्थिक

Blog single photo

سیپلا نے ریمیڈیسویرکاپروڈکشن دوگنا کرنے کا فیصلہ کیا ہے

14/04/2021

نئی دہلی ، 14 اپریل (ہ س)۔ کورونا انفیکشن کی تیز رفتار کے پیش نظر ادویات تیار کرنے والی کمپنی سیپلا نے کورونادوا ریمیڈیسویر سے کاپروڈکشن بڑھا کر دوگنا کر دیا ہے۔ ہندوستانی مارکیٹ میں اس دوا کی کمی کے سبب ، سیپلا نے اس دوا کی پیداوار کو دوگنا کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔
کورونا کی دوسری لہر کی وجہ سے ملک کے ہر حصے میں ریمیڈیسویر کی طلب میں بہت اضافہ ہوا ہے۔ اس کی وجہ سے ، یہ اطلاعات ہیں کہ پچھلے کچھ دنوں سے اس دوا کی مارکیٹ میں مسلسل کمی دیکھی جارہی ہے۔ یہاں تک کہ وڈودرہ ، سورت اور پونے میں اس دوا کی بلیک مارکیٹنگ کی اطلاعات ہیں۔ ممبئی سمیت متعدد شہروں میں لوگوں کو ریمیڈیسویر کے لئے لمبی قطاریں لگانی پڑ رہی ہیں۔ ہندوستانی منڈی میں اس دوا کی قلت ہوجانے کی وجہ سے حکومت ہندنے بھی اس کی برآمدات پر پابندی عائد کردی ہے۔
ریمیڈیسیویر تیار کرنے والی کمپنیوں میں سے ایک سیپلا کا کہنا ہے کہ کورونا کی دوسری لہر کے دوران اس دواکی طلب اچانک بہت تیزی سے بڑھ گئی ہے جس کی وجہ سے ملک کے ہر حصے میں خاطر خواہ سپلائی نہیں ہوسکی۔ ڈیمانڈ کے مقابلے سپلائی کم ہونے کی وجہ سے اس کی کمی محسوس کی جانے لگی ہے۔ اس کے پیش نظر کمپنی نے اب ریمیڈیسویرکی پیداوار کو دوگنا کردیا ہے۔
دوا ساز کمپنی سیپلانے ایک بیان جاری کر کہاکہ کورونا کی پہلی لہر کے وقت ریمیڈیسویر کی جتنی پیداوار ہو رہی تھی ، اس کے مقابلے کورونا کی دوسری لہر کے دوران پہلے ہی دگناپیداوار کر دی گئی ہے۔ اس کے باوجود دوا کی مانگ اچانک بڑھ گئی ہے ، جس کی وجہ سے لوگوں کو پریشانی کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔ اسی لئے کمپنی نے مزید پیداوار بڑھانے کا فیصلہ توکیا ہی ہے ۔ دوا کی مانگ کو کمپنی کے نیٹ ورک کے ذریعے پورا کرنے کی بھی کوششیں کی جارہی ہیں۔
اس وقت ہندوستان میں کل سات دوا ساز کمپنیاں بشمول سیپلا ریمیڈیسویر تیار کررہی ہیں۔ اس کے لئے ان کمپنیوں نے امریکی فارما کمپنی گلیاڈ سائنسز کے ساتھ تجارتی معاہدہ کیا ہے۔ مرکزی حکومت کے محکمہ برائے دواسازی کا دعویٰ ہے کہ ان سات کمپنیوں کی کل پیداواری صلاحیت ماہانہ 38.8 لاکھ یونٹ دوا تیار کرنے کی ہے۔ ہندوستانی دوابازارمیں ریمیڈیسویر کی قلت کے پیش نظر یہ کمپنیاں دوا کی پیداوار کرنے میں اپنی پوری صلاحیت کا استعمال کر رہی ہیں۔ 
ہندوستھان سماچار



 
Top