आर्थिक

Blog single photo

آزادانہ تجارتی معاہدے پریورپی یونین سے پھر بات ہوگی

14/04/2021

نئی دہلی ، 14 اپریل (ہ س)۔ آزادانہ تجارتی معاہدے پر ہندوستان اور یوروپی یونین کے مابین ایک بار پھر مذاکرات شروع ہونے کا امکان ہے۔ آزاد تجارتی معاہدے پر دونوں فریقوں کے درمیان بات چیت کا ابتدائی دور تقریباً 14 سال قبل شروع ہوا تھا ، لیکن 2013 کے بعد سے ، بہت سارے معاملات پر اتفاق رائے نہ ہونے کی وجہ سے دونوں فریقوں کے مابین بات چیت رک گئی تھی۔
یہ خیال کیا جاتا ہے کہ دونوں فریق ایک بار پھر آزاد تجارتی معاہدے پر عمل درآمد کرنے پر اتفاق کر رہے ہیں۔ وزیر خزانہ نرملا سیتارامن نے خود یہ اشارہ بھی کیا ہے کہ مئی کے مہینے میں ہندوستان اور یوروپی یونین کے سربراہی اجلاس کے دوران ایک بار پھر آزاد انہ تجارتی معاہدے پر باضابطہ مذاکرات کا آغاز ہوسکتا ہے۔وزیر خزانہ کا کہنا ہے کہ اس تجارتی معاہدے سے دونوں فریقین کے مابین تعلقات کو مزید مستحکم بنانے میں مددملے گی۔
قابل ذکر ہے کہ ہندوستان اور یوروپی یونین کے مابین جون 2007 میںہی فری ٹریڈ ایگریمنٹ (آزاد تجارتی معاہدے) پر بات چیت کا آغاز ہوا تھا ، لیکن دونوں فریق آئی ٹی سیکٹر کے لئے ڈیٹا سیکورٹی سمیت کئی اہم امور پر اتفاق نہیں کرسکے۔ مذاکرات کے کئی ادوار کے بعد بھی اختلافات کو حل کرنے کی تمام کوششوں کی ناکامی کی وجہ سے مئی 2013 کے بعد ہندوستان اور یوروپی یونین کے درمیان بات چیت نہیں ہوسکی۔
پرتگال کے وزیر خارجہ اگستوسانتوس سلوا کے ساتھ ہو ئی دوطرفہ ملاقات کے دوران ، ہندوستان کی وزیر خزانہ نرملا سیتارمن نے کہا کہ 8 مئی کو پرتگال میں ہونے والے سربراہی اجلاس کے دوران ہندوستان اور یوروپی یونین کے مابین تجارت اور سرمایہ کاری کے معاہدوں کے بارے میں باضابطہ مذاکرات پھر سے شروع ہوناپرتگال کی سربراہی میں یورپی یونین کی ایک بڑی کامیابی ہوگی۔
اس ملاقات کے دوران ، وزیر خزانہ نے ، ایک قدم آگے بڑھتے ہوئے ہندوستان اور یوروپی یونین کے مابین فری ٹریڈایگری منٹ کو لے کر نامکمل مذاکرات کو دوبارہ شروع کرنے کے لئے کہا ، جس پر پرتگالی وزیر خارجہ اگستوسانتوس سلوا نے انتہائی پ±رجوش جواب دیا۔ اگستو سانتوس سلوا نے بھی خود یوروپی یونین کی جانب سے اس موضوع پر گفتگو کرنے کی تجویز پیش کی۔
ہندوستھان سماچار



 
Top