لوک سبھاالیکشن: اتر پردیش کی 14 پر 20کو پانچویں مرحلے میں ووٹنگ
لکھنو، 19 مئی (ہ س)۔ اتر پردیش کی 14 لوک سبھا سیٹوں پر پیر کو پولنگ ہوگی۔ پانچویں مرحلے کی 14 سیٹو
امیٹھی


لکھنو، 19 مئی (ہ س)۔

اتر پردیش کی 14 لوک سبھا سیٹوں پر پیر کو پولنگ ہوگی۔ پانچویں مرحلے کی 14 سیٹوں میں موہن لال گنج (ایس سی )، لکھنو¿ ، رائے بریلی ، امیٹھی ، جالون (ایس )، جھانسی ، ہمیر پور ، باندہ ، فتح پور ، کوشامبی (ایس سی )، بارہ بنکی (ایس سی)، فیض آباد ، قیصر گنج اور گونڈہ شامل ہیں۔ پانچویں مرحلے میں 14 سیٹوں کے لیے کل 144 امیدوار میدان میں ہیں۔ اس کے ساتھ ہی ، لکھنو¿ مشرقی اسمبلی کی خالی نشست کے لیے بھی پیر کو ووٹنگ ہوگی۔ پانچویں مرحلے میں 14 سیٹوں پر 2.5 کروڑ سے زیادہ ووٹر ہیں۔

پانچویں مرحلے کی 14 سیٹوں میں سے 10 سیٹیں جنرل زمرے کی ہیں اور چار سیٹیں درج فہرست ذاتوں کے لیے مخصوص ہیں۔ ان میں سے 13 سیٹیں فی الحال بی جے پی کے پاس ہیں جبکہ رائے بریلی کی واحد سیٹ کانگریس کے پاس ہے۔

پانچویں مرحلے میں بنیادی طور پر لکھنو¿ سے وزیر دفاع راج ناتھ سنگھ ، رائے بریلی سے کانگریس کے راہل گاندھی اور یوگی حکومت کے باغبانی کے وزیر مملکت (آزادانہ چارج) بی جے پی سے دنیش پرتاپ سنگھ ، امیٹھی سے اسمرتی ایرانی ، مرکزی وزیر مملکت، موہن لال گنج سے ہاو¿سنگ اور شہری ترقی کے وزیرکوشل کشور ، فیض آباد سیٹ سے بی جے پی کے للو سنگھ اور ایس پی کے نو بار کے ایم ایل اے اودھیش پرساد میدان میں ہیں۔

برج بھوشن شرن سنگھ کے بیٹے کرن بھوشن سنگھ قیصر گنج سے ، مرکزی وزیر مملکت سادھوی نرنجن جیوتی فتح پور سے ، ایس پی کے سابق ریاستی صدر نریش اتم پٹیل اور کانگریس کے پردیپ جین آدتیہ جھانسی سیٹ سے الیکشن لڑ رہے ہیں۔ بی جے پی نے 12 سیٹوں پر امیدوار دوبارہ اتارے ہیں۔ دو سیٹوں بارہ بنکی اور قیصر گنج کے لیے نئے امیدوار میدان میں ہیں۔

13 مئی کو ریاست میں چوتھے مرحلے میں ووٹنگ کا فیصد 58.22 تھا۔ این ڈی اے ، انڈیا بلاک اور بہوجن سماج پارٹی (بی ایس پی) کے ساتھ سہ رخی مقابلہ ہونے کا امکان ہے۔

ہندوستھان سماچار


 rajesh pande