تاریخ کے آئینے میں 15 مئی: خاندانی اقدار کے احترام کا جشن
خاندان کسی بھی سماجی ڈھانچے کی ریڑھ کی ہڈی کی حیثیت رکھتا ہے۔ موجودہ دور میں خاندانوں کی ٹوٹ پھوٹ کو
تاریخ کے آئینے 


خاندان کسی بھی سماجی ڈھانچے کی ریڑھ کی ہڈی کی حیثیت رکھتا ہے۔ موجودہ دور میں خاندانوں کی ٹوٹ پھوٹ کو سماجی ٹوٹ پھوٹ کے طور پر دیکھا جا سکتا ہے۔ مغرب ہو یا مشرق ، دنیا کے ہر ملک میں خاندان کی موجودگی نہ صرف وہاں کی سماجی ترقی میں اہم کردار ادا کرتی ہے بلکہ ہر دور میں اس کی ضرورت رہی ہے۔ کورونا کے دور نے خاندان کی اس ضرورت کی نئی وضاحت کی۔ خاندان کے اس کردار کو منانے کے لیے ہر سال 15 مئی کو ورلڈ فیملی ڈے منایا جاتا ہے۔

خاندان ایک مضبوط ملک کی تعمیر میں ایک بے مثال ادارہ ہے ، جو فرد کی ترقی کے ساتھ ساتھ معاشرے کی ترقی میں بھی اپنا کردار ادا کرتا ہے۔ ہندوستان جیسے ملک میں رشتوں اور خاندان کو بہت عزت دی جاتی ہے۔ ایسے میں لوگ ہر سال 15 مئی کو اپنے خاندان کے ساتھ فیملی ڈے مناتے ہیں۔ خاندان کی افادیت کو دیکھتے ہوئے اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی نے اس دن کو عالمی سطح پر منانے کا فیصلہ کیا تھا۔

ورلڈ فیملی ڈے پہلی بار 1994 میں منایا گیا۔ حالانکہ اس دن کی بنیاد 1989 میں ہی رکھی گئی تھی۔ اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی نے 9 دسمبر 1989 کو قرارداد نمبر 44/82 میں ہر سال خاندان کا عالمی دن منانے کا اعلان کیا تھا جس کا مقصد زندگی میں خاندان کی اہمیت کو اجاگر کرنا تھا۔ بعد ازاں سال 1993 میں اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی نے ایک قرارداد کے ذریعے 15 مئی کو فیملی ڈے کی تاریخ مقرر کیا۔ تب سے ہر سال 15 مئی کو ورلڈ فیملی ڈے منایا جانے لگا۔ اس دن کو منانے کا مقصد دنیا بھر کے لوگوں کو اپنے خاندانوں سے جوڑنا اور خاندان سے متعلق مسائل پر معاشرے میں آگاہی پھیلانا ہے۔

دیگر اہم واقعات:

1935- ماسکو میٹرو عوام کے لیے کھول دی گئی۔

1940 - دو بھائیوں، رچرڈ اور موریس میکڈونالڈ نے سان برنارڈینو، کیلیفورنیا میں میک ڈونالڈز شروع کیا۔

1958 - سوویت یونین نے سپوتنک 3 راکٹ لانچ کیا

1999 - کویت کی حکومت نے خواتین کو پارلیمانی انتخابات میں ووٹ دینے کا حق دیا

2001- اٹلی میں دائیں بازو کے اتحاد کو اکثریت ملی۔

2002 - اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل نے عراق پر پابندیوں کی منظوری دی

2003- عراق جنگ میں امریکی افواج کے کمانڈر ٹومی فریکس کے خلاف برسلز کی عدالت میں جنگ سے متعلق مقدمہ دائر کیا گیا۔

2005- بھارتی طیارہ 20 سال بعد کینیڈا میں اترا۔

2008- سری لنکا کی حکومت نے دہشت گرد تنظیم ایل ٹی ٹی ای پر پابندی میں دو سال کی توسیع کر دی۔

2008: ہندوستانی نڑاد منجولا سود برطانیہ میں میئر بننے والی پہلی ایشیائی خاتون بنیں۔

پیدائش

1817- دیویندر ناتھ ٹھاکر- مشہور مذہبی رہنما۔

1897 - الوری سیتارام راجو - مشہور جنوبی ہند کے مشہور مجاہد آزادی

1907 - سکھدیو - عظیم شہید انقلابی

1923 - جانی واکر - ہندوستانی مزاح نگار۔

1933-ٹی این شیشن -بھارت کے سابق چیف الیکشن کمشنر۔

1965- مادھوری دکشت- بالی ووڈ اداکارہ

1957 - سشیل چندر - ہندوستان کے 24 ویں چیف الیکشن کمشنر

1926- مہندر ناتھ ملا- ہندوستانی بحریہ کے بہادر افسر

1892 - ہری ونائک پٹاسکر - ہندوستانی سیاست دان اور مدھیہ پردیش کے سابق گورنر۔

موت

1958- یدونتھ سرکار- مشہور مورخ۔

1991- کالندی چرن پانیگراہی- مشہور اڑیہ کوی ، ناول نگار ، کہانی نویس ، ڈرامہ نگار اور مضمون نگار۔

1993-کے ایم کیریپا - ہندوستان کے پہلے آرمی کمانڈر ان چیف۔

2010- بھیرون سنگھ شیخاوت- راجستھان کے سابق وزیر اعلیٰ اور ہندوستان کے نائب صدر۔

2017- سبرامنیم رامسوامی- پڈوچیری کے چوتھے وزیر اعلیٰ۔

اہم مواقع اور تقریبات

عالمی خاندانی دن

ہندوستھان سماچار


 rajesh pande