جھارکھنڈ کی چار لوک سبھا سیٹوں پر 13 مئی کو ووٹنگ، کئی سرکردہ لیڈروں کی ساکھ داؤ پر
رانچی، 12 مئی (ہ س)۔ جھارکھنڈ کی 14 لوک سبھا سیٹوں میں سے چار کے لیے چوتھے مرحلے میں 13 مئی کو ووٹنگ
جھارکھنڈ کی چار لوک سبھا سیٹوں پر 13 مئی کو ووٹنگ، کئی سرکردہ لیڈروں کی ساکھ داؤ پر


رانچی، 12 مئی (ہ س)۔ جھارکھنڈ کی 14 لوک سبھا سیٹوں میں سے چار کے لیے چوتھے مرحلے میں 13 مئی کو ووٹنگ ہونی ہے۔ ان چار سیٹوں میں سے ایک پلامو سیٹ ایس سی کے لیے مخصوص ہے جبکہ باقی تین سیٹیں ایس ٹی کے لیے ریزرو ہیں۔ فی الحال ان چار سیٹوں میں سے سنگھ بھوم کو چھوڑ کر باقی تمام تین سیٹیں بی جے پی کے پاس ہیں۔

اس مرحلے میں سنگھ بھوم، لوہردگا، کھنٹی اور پلامو میں ووٹنگ ہونی ہے۔ اس کے لیے پولنگ اہلکار اور سکیورٹی فورسز اتوار کو مقررہ پولنگ مراکز کے لیے روانہ ہو گئے۔ ان سیٹوں پر ووٹنگ پیر کی صبح 7 بجے سے شام تک ہوگی۔ اس سے قبل ہفتہ کو ان پارلیمانی حلقوں میں انتخابی مہم ٹھپ ہو گئی تھی۔ کاغذات نامزدگی سے لے کر انتخابی مہم کے آخری دن تک ان چاروں نشستوں کے امیدواروں نے بھرپور طریقے سے مہم چلائی۔

کھنٹی- کھنٹی میں سیدھا مقابلہ بی جے پی کے ارجن منڈا اور کانگریس کے کالی چرن منڈا کے درمیان ہے۔ تاہم کل سات امیدوار اپنی قسمت آزمانے کے لیے یہاں انتخابی میدان میں اترے ہیں۔ آزاد امیدوار کے طور پر الیکشن لڑنے والی ببیتا کچھپ کے بارے میں قیاس آرائیاں کی جا رہی تھیں کہ وہ اس مقابلے کو سہ رخی بنا سکتی ہیں، کیونکہ انہوں نے کھونٹی میں مشہور پتھل گڑی تحریک کی قیادت کی تھی۔

سنگھ بھوم - بی جے پی نے اس الیکشن 2019 میں کانگریس کے ٹکٹ پر سنگھ بھوم سیٹ سے جیتنے والی گیتا کوڈا کو میدان میں اتارا ہے، جب کہ جے ایم ایم نے جوبا مانجھی کو میدان میں اتارا ہے۔

لوہردگا- لوہردگا سیٹ فی الحال بی جے پی کے پاس ہے۔ اس بار جے ایم ایم کے باغی ایم ایل اے چمرا لنڈا نے الیکشن کو سہ رخی بنا دیا ہے۔ ویسے اگر براہ راست دیکھا جائے تو مقابلہ کانگریس کے سکھ دیو بھگت اور بی جے پی کے سمیر اوراوں کے درمیان ہے۔

پلامو- پلامو لوک سبھا حلقہ میں انڈیا اتحاد کے تحت یہ سیٹ آر جے ڈی کے کھاتے میں گئی ہے۔ پارٹی نے ممتا بھونیا کو اپنا امیدوار بنایا ہے۔ اس سیٹ پر گزشتہ ضمنی انتخاب میں آر جے ڈی امیدوار گھورن رام نے کامیابی حاصل کی تھی۔ اس بار گھورن رام بی جے پی میں ہیں۔ ممتا بھونیا پہلی بار الیکشن لڑ رہی ہیں۔ بی جے پی امیدوار ریاست کے سابق ڈی جی پی وی ڈی رام ہیں، جو دو بار رکن اسمبلی رہ چکے ہیں۔

اب سب کی نظریں اس پر لگی ہوئی ہیں کہ کیا بی جے پی 2019 کی طرح ان سیٹوں (سنگھ بھوم کو چھوڑ کر) پر پھر سے اپنی جیت کا جھنڈا لہرانے میں کامیاب ہوگی۔ کھنٹی سے ارجن منڈا، پلامو سے وی ڈی رام، لوہردگا سے سمیر اوراون اور گیتا کوڈا (اب بی جے پی) سنگھ بھوم سیٹ سے جیتنے میں کامیاب ہوں گے۔ انڈیا اتحاد نے کھنٹی سیٹ سے کالی چرن منڈا (سابق ایم ایل اے)، پلامو سے ممتا بھویاں، لوہردگا سے سکھ دیو بھگت (سابق ایم ایل اے) اور سنگھ بھوم سے جوبا مانجھی (سابق وزیر) کو میدان میں اتارا ہے۔ اب ایسی صورتحال میں ان نشستوں پر بھی دلچسپ مقابلہ متوقع ہے۔

ہندوستھان سماچار/ عبد الواحد


 rajesh pande