جب ہم ماتوشری جاتے تھے تو پرساد لے جاتے تھے، تو کیا وہ کالا دھن نہیں تھا: نارائن رانے
ممبئی ، 2اپریل (ہ س) ادھو ٹھاکرے کی جانب سے دہلی میں وزیر اعظم مودی پر کی گئی تنقید کا جواب دیتے
جب ہم ماتوشری جاتے تھے تو پرساد لے جاتے تھے، تو کیا وہ کالا دھن نہیں تھا: نارائن رانے


ممبئی ، 2اپریل (ہ س) ادھو ٹھاکرے کی جانب سے دہلی میں وزیر اعظم مودی پر کی گئی تنقید کا جواب دیتے ہوئے آج مرکزی وزیر نارائن رانے نے ادھو ٹھاکرے کو آڑے ہاتھوں لیا، انھوں نے کہا کہ جب ہم ماتوشری جاتے تھے تو پرساد لے جاتے تھے، تو کیا وہ کالا دھن نہیں تھا؟

انھوں نے کہا کہ شیو سینا ٹھاکرے کے دھڑے میں 5 ایم پی اور 16 ایم ایل اے ہیں۔ ایسا شخص دہلی کے رام لیلا میدان میں جا کر ملک کے وزیر اعظم پر بولتا ہے۔ لیکن ان کا سیاسی قد کیا ہے؟ کیا آپ وزیر اعلیٰ بننے کی وجہ سے اتنی باتیں کرتے ہیں؟ ان کا سیاسی قد کاٹھ کیا ہے؟ وہ اتنی حیثیت نہیں رکھتے کہ وزیر اعظم کے بارے میں بات کر سکیں۔ ہمارے بی جے پی کے 303 ایم پی ہیں اور ٹھاکرے گروپ کے پاس 5 ایم پی ہیں۔ کیا ٹھاکرے صرف وزیر اعلیٰ بننے کی وجہ سے اتنا کہیں گے؟ مودی پر تنقید کریں گے؟۔

کہا جاتا ہے کہ وزیر اعظم مودی کی پارٹی کو تڑی پار کیا جائے۔ اگر مرکز اور ریاست میں ہمارے پاس اقتدار ہے، تو کس کو تڑی پار کرنا ہے یہ ہم طئے کریں گے۔اگر ہم تڑی پار کرنے کا فیصلہ کرتے ہیں، ہم ان لوگوں کو تڑی پار کریں گے جنہوں نے کورونا کے دور میں پیسہ کھایا۔

آج پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے نارائن رانے نے مزید کہاادھو ٹھاکرے اپنے بارے میں کیا سوچتے ہیں؟ ایسا لگتا ہے کہ ان کی ذہنی حالت خراب ہو گئی ہے۔ وہ ملک کے وزیراعظم کے بارے میں بات کرنے کے اہل نہیں۔ہماری پارٹی دنیا کی سب سے بڑی پارٹی ہے۔

انھوں نے طنز کیا کہ کچھ معلومات حاصل کریں۔ صرف سامنا ( اخبار) نہ پڑھیں۔ دوسری معلومات بھی حاصل کریں۔ میں 40 سال سے شیوسینا میں تھا۔ ہم جب بھی ماتوشری جاتے تھے۔ تب میں کبھی خالی ہاتھ نہیں گیا۔ پھر ہمیں 'پرساد' لے جانا پڑا۔ تو جو پیسہ تم اس وقت ہم سے مانگ رہے تھے، کیا وہ پیسہ کالا دھن نہیں تھا؟ ادھو ٹھاکرے اور آدتیہ ٹھاکرے کا کاروبار کیا ہے؟

نارائن رانے نے سوال کیا۔مودی جی نے کورونا کے دور میں 80 کروڑ غریبوں کو مفت کھانا دینے کی اسکیم شروع کی۔ یہ منصوبہ آج بھی جاری ہے۔ لیکن کیا ادھو ٹھاکرے نے کورونا کے دور میں کبھی اپنے پیسوں سے کسی کو اناج بھیجا؟‘‘

ہندوستان سماچار/ نثار/سلام


 rajesh pande