ملک میں سرمایہ کاروں کے اعتماد کی وجہ سے کیپٹل مارکیٹ میں قدروں میں اضافہ: سیبی
ممبئی، 2اپریل (ہ س)۔ مارکیٹ ریگولیٹر سیکورٹیز اینڈ ایکسچینج بورڈ آف انڈیا (سیبی) کی سربراہ مادھوی
Securities and Exchange Board of India (SEBI)  


ممبئی، 2اپریل (ہ س)۔

مارکیٹ ریگولیٹر سیکورٹیز اینڈ ایکسچینج بورڈ آف انڈیا (سیبی) کی سربراہ مادھوی بُچ نے منگل کو کہا کہ ہندوستان کی کیپٹل مارکیٹ میں زیادہ قیمت غیر ملکی سرمایہ کاروں کی ملک میں امید اور اعتماد کی وجہ سے ہے۔ انہوں نے کہا کہ ویلیو ارننگ کا تناسب 22.2 ہے جو کہ بہت سے عالمی انڈیکس کی اوسط سے زیادہ ہے۔

سیبی کے سربراہ نے یہ بات یہاں کمپنی گورننس پر انڈسٹری باڈی کنفیڈریشن آف انڈین انڈسٹری (سی آئی آئی) کے زیر اہتمام منعقدہ ایک تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہی۔ انہوں نے کہا کہ معیشت کی مضبوطی کو ظاہر کرنے والے اعداد و شمار سے ان کی حوصلہ افزائی ہوئی ہے۔ ان میں جی ایس ٹی ریونیو کی وصولی، ایڈوانس ٹیکس کی ادائیگی، بجلی اور توانائی کی کھپت میں اضافہ جیسے اعداد و شمار شامل ہیں۔

بوچ نے کہا کہ مارکیٹ میں دلچسپی کی وجہ سے، گزشتہ مالی سال 2023-24 کے اختتام پر شیئر سیگمنٹ میں کل مارکیٹ کیپٹلائزیشن بڑھ کر 378 لاکھ کروڑ روپے ہو گئی ہے، جو ایک دہائی قبل 74 لاکھ کروڑ روپے تھی۔ انہوں نے کہا کہ مارکیٹ کیپٹلائزیشن اب مجموعی گھریلو پیداوار (جی ڈی پی) کی سطح پر ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہندوستانی اداروں نے مالی سال 2023-24 میں ایکویٹی اور بانڈ کے اجراء کے ذریعے مارکیٹ سے کل 10.5 لاکھ کروڑ روپے اکٹھے کئے۔ اس میں آٹھ لاکھ کروڑ روپے سے زیادہ بانڈز کے ذریعے اکٹھے ہوئے ہیں۔

ہندوستان سماچار/ نثار/محمد


 rajesh pande