تاریخ کے آئینے میں 10 فروری: جے آر ڈی ٹاٹا جیسا کوئی نہیں
10 فروری کی تاریخ ملک و دنیا کی تاریخ میں کئی اہم وجوہات کی بنا پر درج ہے۔ یہ تاریخ آنجہانی صنعت کار
تاریخ کے آئینے میں 10 فروری: جے آر ڈی ٹاٹا جیسا کوئی نہیں


10 فروری کی تاریخ ملک و دنیا کی تاریخ میں کئی اہم وجوہات کی بنا پر درج ہے۔ یہ تاریخ آنجہانی صنعت کار جے آر ٹی ٹاٹا کی زندگی میں ایک سنہری باب کے طور پر نشان زد ہے۔ دراصل 10 فروری 1929 کو جے آر ڈی ٹاٹا کو ہندوستان کا پہلا پائلٹ لائسنس دیا گیا تھا۔ جے آر ڈی نے ملک کی پہلی تجارتی ایئر لائن ٹاٹا ایئر لائن شروع کی، جو بعد میں 1946 میں ایئر انڈیا بن گئی۔

جے آر ڈی ٹاٹا نے 15 اکتوبر 1932 کو صبح 6:35 بجے کراچی کے درگ روڈ ہوائی اڈے سے پوس ماتھ ہوائی جہاز سے ممبئی کے لیے پرواز کیا تھا ۔ اس دوران طیارہ احمد آباد میں کچھ دیر کے لیے رکاتھا، جہاں برما شیل سے چار گیلن بیرل پیٹرول بیل گاڑی پر لا کر اس چھوٹے طیارے میں بھرا گیا۔ اس کے بعد طیارہ 1 بجکر 50 منٹ پر ممبئی کے جوہو ایئرپورٹ پر اترا۔ اس دوران جہاز میں کوئی مسافر نہیں تھا بلکہ یہ خطوط سے بھرا ہوا تھا۔ ان خطوط کا کل وزن 27 کلو گرام تھا۔ یہ خطوط لندن سے امپیریل ایئرویز کے ذریعے کراچی لائے گئے تھے۔

سال 1933 ٹاٹا ایئر لائنز کے لیے پہلا کاروباری سال تھا۔ ٹاٹا سنز کی طرف سے 2 لاکھ روپے کی لاگت سے قائم ہونے والی کمپنی نے اسی سال 155 مسافروں اور تقریباً 11 ٹن ڈاک بھی لے گئے۔ برطانوی رائل ایئر فورس کے پائلٹ ہومی بھروچا ٹاٹا ایئر لائنز کے پہلے پائلٹ تھے، جب کہ جے آر ڈی ٹاٹا اور ونسنٹ دوسرے اور تیسرے پائلٹ تھے۔

جے آر ڈی کی سوانح عمری 'بیونڈ دی لاسٹ بلیو ماو¿نٹین' میں آر ایم لالہ لکھتے ہیں کہ لندن ٹائمز کے 19 نومبر 1929 کے شمارے میں آغا خان کی جانب سے ایک اشتہار شائع ہوا تھا، جس میں کہا گیا تھا کہ ہندوستانی جو یہاں سے جانا چاہتے ہیں۔ انگلینڈ سے انڈیا یا انڈیا سے انگلینڈ۔جو بھی ہوائی جہاز میں اکیلا سفر کرے گا اسے 500 پاو¿نڈ کا انعام دیا جائے گا۔ ٹاٹا نے اس چیلنج کو قبول کیا۔ اس میچ میں انہیں اسپی انجینئر نے شکست دی، جو بعد میں ہندوستان کے فضائیہ کے سربراہ بنے۔ جے آر ڈی ٹاٹا کو 1957 میں پدم وبھوشن اور 1992 میں بھارت رتن سے نوازا گیا۔ جے آر ڈی ٹاٹا نے 29 نومبر 1993 کو آخری سانس لی۔

اہم واقعات

1495: سر ولیم اسٹینلے کو انگلینڈ میں موت کے گھاٹ اتار دیا گیا۔

1616: برطانوی سفیر سر تھامس رو نے اجمیر میں مغل حکمراں جہانگیر سے ملاقات کی۔

1763: فرانس نے معاہدہ پیرس کے تحت کینیڈا برطانیہ کو دے دیا۔

1811: روسی فوجوں نے بلغراد پر قبضہ کر لیا۔

1817: برطانیہ، پرشیا، آسٹریا اور روس نے فرانس سے اپنی فوجیں نکالنے کا اعلان کیا۔

1818: انگریزوں اور مرہٹوں کے درمیان تیسری اور آخری جنگ رام پور میں لڑی گئی۔

1828: جنوبی امریکہ کے انقلابی سائمن بولیور کولمبیا کے حکمراں بن گئے۔

1846: انگریزوں نے سبراون کی لڑائی میں سکھوں کو شکست دی۔

1879: امریکہ کے کیلیفورنیا تھیٹر میں پہلی بار روشنی کے لیے بجلی کا استعمال کیا گیا۔

1904: جاپان اور روس نے جنگ کا اعلان کیا۔

1912: برطانیہ کے بادشاہ جارج پنجم اور ملکہ میری ہندوستان سے روانہ ہوئے۔

1916: برطانیہ میں فوجی بھرتی شروع ہوئی۔

1918: سوویت رہنما لیو ٹراٹسکی نے پہلی جنگ عظیم سے روس کی دستبرداری کا اعلان کیا۔

1921: مہاتما گاندھی نے کاشی ودیا پیٹھ کا افتتاح کیا۔

1921: ڈیوک آف کناٹ نے انڈیا گیٹ کی بنیاد رکھی۔

1929: جے آر ڈی ٹاٹا پائلٹ کا لائسنس حاصل کرنے والے پہلے ہندوستانی بنے۔

1931: دہلی ہندوستان کا دارالحکومت بنا۔

1933: جرمنی کے ڈکٹیٹر ہٹلر نے مارکسزم کے خاتمے کا اعلان کیا۔

1939: جاپانی فوجیوں نے ہینان جزیرہ (چین) پر قبضہ کر لیا۔

1943: دوسری جنگ عظیم کے دوران برطانوی فوجی تیونس کی سرحد پر پہنچ گئے۔

1961: امریکہ نے ویسٹ انڈیز کے کئی مقامات پر اپنے دعوے ترک کر دیے۔

1966: یورپی ملک بیلجیم میں ہرمل کی حکومت نے استعفیٰ دے دیا۔

1969: امریکہ، برطانیہ اور جرمنی نے مغربی برلن کے سفر پر عائد پابندی اٹھا لی

1972: سوویت یونین نے مشرقی قازقستان میں ایٹمی تجربہ کیا۔

1974: عراق نے سرحدی جھڑپ میں 70 ایرانی فوجیوں کو ہلاک کرنے کا دعویٰ کیا۔

1979: ایٹا نگر کو اروناچل پردیش کا دارالحکومت بنایا گیا۔

1991: یورپی ملک لتھوانیا نے سوویت یونین سے آزادی کے حق میں ووٹ دیا۔

1992: انڈمان نکوبار جزائر غیر ملکی سیاحوں کے لیے کھول دیا گیا۔

1996: آئی بی ایم کے سپر کمپیوٹر 'ڈیپ بلیو' نے شطرنج میں گیری کاسپاروف کو شکست دی۔

1998: ماحولیاتی بہتری کے پروگراموں کے لیے 35 ممالک نے 'عالمی ماحولیات کی سہولت' پر ایک بین الاقوامی معاہدے پر دستخط کیے۔

2001: امریکی ایٹمی آبدوز ہونولولو میں جاپانی کشتی سے ٹکرا گئی۔ 10 طلباء لاپتہ۔

2004: بغداد میں ایک پولیس اسٹیشن کے باہراحر میں کار بم دھماکے میں 45 افراد جاں بحق۔

2005: ڈیموکریٹ رکن پارلیمنٹ فرینک پالون نے سلامتی کونسل میں ہندوستان کے دعوے کی حمایت میں امریکی ایوان نمائندگان میں ایک بل پیش کیا۔

2006: نیپال کے میونسپل کارپوریشن انتخابات میں راجہ کے حامیوں کی فتح۔

2008: سری لنکا کے شمال میں فوجیوں اور ایل ٹی ٹی ای کے درمیان جھڑپ میں 42 باغی مارے گئے۔

2009: صومالیہ کے ساحل پر ہندوستان-روسی بحریہ کی مشترکہ مشق۔

2009: مشہور کلاسیکی گلوکار پنڈت بھیمسین جوشی کو ملک کے سب سے بڑے شہری اعزاز بھارت رتن سے نوازا گیا۔

2013: پریاگ راج (اس وقت الہ آباد) میں کمبھ میلے کے دوران بھگدڑ میں 36 افراد ہلاک ہوئے۔

پیدائش

1890 - روسی مصنف بورس پاسٹرناک کی پیدائش۔

1915: مشہور مصنف سریندر کمار سریواستو۔

1916: پنجاب کے سابق وزیر اعلیٰ دربار سنگھ۔

1935: پرمانند سریواستو، ہندی ادب کے اعلیٰ نقاد۔

1970: شاعر کمار وشواس۔ کمار ہندی کویتا منچ کے واحد شاعر ہیں، جن کی شاعری ہندوستان کے تقریباً تمام بڑے موبائل آپریٹرز کی کالر ٹیون میں شامل ہے۔

موت

1858: راجہ بختاور سنگھ، مدھیہ پردیش کے دھار ضلع کے امجھیرا قصبے کا حکمران۔

1975: ہندی کے مشہور شاعر سداما پانڈے 'دھومل'۔

1995: مشہور ادیب گلشیر خان ثانی۔

ہندوستھان سماچار


 rajesh pande