سورج کنڈ میلہ: پدم شری دلشاد حسین میٹل آرٹ کوملک اور بیرون ملک میں دے رہے ہیں الگ پہچان
۔75 سالہ فنکار اپنے خاندان کے ساتھ اپنے آبائی فن کو آگے بڑھا رہے ہیں ۔وزیر اعظم نریندر مودی نے فنکا
Surajkund: Padmashree Dilshad Hussain metal art


۔75 سالہ فنکار اپنے خاندان کے ساتھ اپنے آبائی فن کو آگے بڑھا رہے ہیں

۔وزیر اعظم نریندر مودی نے فنکار کا بنایا ہوا برتن جرمنی کی چانسلر کو پیش کیا تھا

فریدآباد، 8 فروری (ہ س)۔ اتر پردیش کے مراد آباد کے 75 سالہ دلشاد حسین دھاتی فن کو ملک اور بیرون ملک مشہور کرنے میں مصروف ہیں۔ پدم شری ایوارڈ یافتہ یہ فنکار تین نسلوں سے اپنے خاندان کے ساتھ اپنے آبائی فن کو آگے بڑھا رہا ہے۔ وزیر اعظم نریندر مودی نے اپنے دورہ جرمنی کے دوران جرمنی کی چانسلر کو اس دستکار کا بنایا ہوا دھات کا برتن پیش کیا تھا۔

یہ فنکار اپنے فن پاروں کے ساتھ 37ویں سورج کنڈ بین الاقوامی دستکاری میلے میں بھی پہنچ چکا ہے، جسے سیاح قریب سے سراہتے ہوئے دیکھے جا سکتے ہیں۔ مرادآباد پورے ملک میں پیتل کے برتنوں کے لیے مشہور ہے۔ دلشاد حسین نے میلے کے احاطے میں اسٹال نمبر 1224 پر اپنے دھاتی نوادرات کو بہت اچھے طریقے سے ڈسپلے کیا ہے۔ ان نوادرات میں برتن، پھولوں کے برتن، حقہ وغیرہ شامل ہیں۔ اس اسٹال پر سیاح 50 روپے سے لے کر 20 ہزار روپے تک کے خوبصورت دھاتی فن پارے کی خریداری میں دلچسپی ظاہر کر رہے ہیں۔ دلشاد کے پانچ بیٹے ریحان، فیضل، نوشاد، انس اور ثاقب بھی اپنے والد کے ساتھ اپنے آبائی فن کو آگے بڑھا رہے ہیں۔ دلشاد حسین کو میٹل کرافٹ آرٹ کو فروغ دینے کے لیے صدر جمہوریہ دروپدی مرمو نے سال 2023 کے لیے پدم شری ایوارڈ سے نوازا ہے۔

1021 کے اسٹال پر اڈیشہ کے کاریگروں کے ذریعہ حقیقی موتیوںکی نمائش

اڈیشہ کے بالاسور کے کاریگر ساہو خاندان کی طرف سے میلے کے احاطے میں سچے موتیوں کا ایک اسٹال لگایا گیا ہے۔ اس اسٹال پر خواتین کے زیورات کی نمائش کی گئی ہے۔ یہ خاندان کھیتی باڑی کے ساتھ ساتھ اپنے آبائی فن کو بھی آگے بڑھا رہا ہے۔ اجے ساہو کی قیادت میں خاندان کے دیگر افراد میلے میں پہنچ گئے ہیں۔ اس کے علاوہ یہ خاندان دہلی ہاٹ میں ان زیورات کی نمائش بھی کر رہا ہے۔

ہندوستھا ن سماچار


 rajesh pande