وزیر اعظم مودی کی قیادت میں ہندوستان دنیا کا لیڈر بننے کی طرف بڑھ رہا ہے : سی پی جوشی
جے پور ، 25 فروری (ہ س)۔ بی جے پی کے ریاستی صدر سی پی جوشی نے دھول پور ، باری ، کرولی ، گنگا پور سٹی
وزیر اعظم مودی کی قیادت میں ہندوستان دنیا کا لیڈر بننے کی طرف بڑھ رہا ہے : سی پی جوشی


جے پور ، 25 فروری (ہ س)۔

بی جے پی کے ریاستی صدر سی پی جوشی نے دھول پور ، باری ، کرولی ، گنگا پور سٹی اور سوائی مادھو پور وغیرہ میں ای آر سی پی یاترا کی تشکری میٹنگوں سے خطاب کیا اور وزیر اعظم نریندر مودی ، وزیر اعلی بھجن لال شرما اور مرکزی جل شکتی وزیر کا شکریہ ادا کیا۔بی جے پی کے ریاستی صدر سی پی جوشی نے کہا کہ عوام نے کمل کھلا کر راجستھان میں بی جے پی کی ڈبل انجن والی حکومت بنائی جس نے عام لوگوں کے خوابوں کو پورا کرنے کے لیے الیکشن کے وقت کا انتظار نہیں کیا اور روز اول سے ہی کہا کہ جو بھی قرارداد ہم نے لیا ہے، پورا کرنا ہے۔ بی جے پی کی عوام دوست حکومت کے ساٹھ دنوں کے اندر راجستھان کو دو ایسے پروجیکٹوں کا تحفہ ملا ہے جس سے ریاست کی نصف آبادی کو فائدہ پہنچے گا۔

بی جے پی کے ریاستی صدر سی پی جوشی نے کہا کہ ’بھا‘ کا پانی سے پرانا رشتہ ہے۔ 'بھ' سے بھگوان ، بھومی بھی ہوتا ہے، بھاگیرت بھی ہوتا ہے اور بھجن لال بھی ہوتا ہے۔وزیراعلیٰ بھجن لال راجستھان کے بھاگیرتھ بن گئے اور ان اسکیموں کو منظور کروایا۔

بی جے پی کے ریاستی صدر سی پی جوشی نے کہا کہ وزیر اعظم نریندر مودی کی قیادت میں ملک مضبوط ہوا ہے اور دنیا کا لیڈر بننے کی طرف بڑھ رہا ہے۔ ایک وقت تھا جب ہندوستان دنیا کی طرف دیکھتا تھا کہ دنیا کیا کہے گی اور ہم اس پر عمل کریں گے ، لیکن آج دنیا دیکھتی ہے کہ ہندوستان کا وزیر اعظم کیا کہتا ہے اور اس پر عمل کرتا ہے۔ مودی سرکار نے ملک کی سرحدیں مضبوط کیں ، اجولا اسکیم کے تحت ہر غریب کو گھر ، بیت الخلا ، گیس کنکشن دیا ، غریبوں کے لیے بینک اکاو¿نٹ کھولے ، کسانوں کو سمان ندھی دی ، عوام نے کشمیر سے آرٹیکل 370 ہٹانے کی حمایت کی۔ ایودھیا میں بھگوان شری رام للا کی موت، ایک دیوی اور عظیم الشان مندر کی تعمیر بھی دیکھی۔ آج ملک کے غریبوں ، نوجوانوں ، کسانوں ، خواتین ، دیہاتوں اور شہروں کا وزیر اعظم مودی پر اٹل اعتماد ہے کیونکہ انہوں نے وعدے اور نعرے دے کر نہیں بلکہ جو کچھ کہا اسے پورا کر کے دکھایا ہے۔ بی جے پی کے ریاستی صدر سی پی جوشی نے کہا کہ وزیر اعظم نریندر مودی کو مزید مضبوط کرنے کے لیے ہمیں ریاست کی 25 میں سے 25 سیٹوں پر کمل کھلانا ہوگا۔

ہندوستھان سماچار


 rajesh pande