بھوپال: غذائی قلت کے شکار بچوں کی تعداد میں اجین ضلع سرفہرست ۔
بھوپال/ناگدا، 12 فروری (ہ س)۔ مدھیہ پردیش میں غذائی قلت کے شکار بچوں کی تعداد کے لحاظ سے اجین ضلع اج
بھوپال: غذائی قلت کے شکار بچوں کی تعداد میں اجین ضلع سرفہرست ۔


بھوپال/ناگدا، 12 فروری (ہ س)۔ مدھیہ پردیش میں غذائی قلت کے شکار بچوں کی تعداد کے لحاظ سے اجین ضلع اجین ڈویژن میں سرفہرست ہے۔ اجین ڈویژن میں کل 7 اضلاع شامل ہیں۔ اجین ڈویژن میں مجموعی طور پر 14,156 شدید غذائیت اور غذائیت کے شکار بچے غذائی قلت کا شکار ہیں۔ یہ اعداد و شمار ایک سرکاری اطلاع میں سامنے آئے ہیں۔ ان تمام اضلاع میں اجین ضلع بچوں کی غذائی قلت میں پہلے نمبر پر ہے۔ اجین ضلع میں سب سے زیادہ 3451 بچے غذائی قلت کا شکار پائے گئے ہیں۔ اجین ڈویژن میں شاجاپور، آگر، دیواس، مندسور، نیمچ، رتلام اور اجین اضلاع شامل ہیں۔

حکومتی تعریف کے مطابق غذائی قلت کے شکار بچوں کی دو قسمیں ہیں۔ ایک غذائیت کا شکار (ایس اے ایم) اور دوسرا غذائیت کا شکار (ایم اے ایم)۔ ان دونوں زمروں میں پہلی قسم میں ضلع اجین میں 571 بچے اور دوسری غذائی قلت والے زمرے میں 2880 بچے غذائی قلت کا شکار ہیں۔ دونوں زمروں کا مجموعہ 3451 ہے جو اجین ڈویژن کے تمام اضلاع میں سب سے زیادہ ہے، جب کہ آگر ضلع اجین ڈویژن میں سب سے کم پرورش پانے والے بچوں میں شامل ہے۔ اس ضلع میں صرف 617 بچے ہیں۔ آگر ضلع میں 78 شدید غذائی قلت کا شکار اور 530 غذائی قلت کے شکار بچے ہیں۔ سرکاری معلومات کی یہ تعداد 30 جنوری 2024 تک کی گئی ہے، جو چیف منسٹر چائلڈ ہیلتھ پروموشن پروگرام میں درج ڈیٹا پر مبنی ہے۔

ہندوستھان سماچار


 rajesh pande