ایف بی آئی اور سی بی آئی سائبر کرائم کے تئیں فکر مند، افسران نے کیا تبادلہ خیال
واشنگٹن، 24 جنوری (ہ س)۔ بھارت اور امریکہ کی اعلیٰ تفتیشی ایجنسیاں، سنٹرل بیورو آف انویسٹی گیشن (سی


FBI & CBI 

واشنگٹن، 24 جنوری (ہ س)۔ بھارت اور امریکہ کی اعلیٰ تفتیشی ایجنسیاں، سنٹرل بیورو آف انویسٹی گیشن (سی بی آئی) اور فیڈرل بیورو آف انویسٹی گیشن (ایف بی آئی)، بڑھتے ہوئے سائبر کرائم کے تئیں فکرمند ہیں۔ دونوں ایجنسیوں کے اعلیٰ عہدیداروں اور امریکی محکمہ انصاف کے عہدیداروں نے جدید ٹیکنالوجی پر مبنی جرائم کا مقابلہ کرنے میں مسلسل تعاون کو برقرار رکھنے پر تبادلہ خیال کیا۔

امریکی وزارت انصاف نے پیر کو یہاں کہا کہ ایف بی آئی اور سی بی آئی کے حکام نے گزشتہ ہفتے نئی دہلی میں اس سلسلے میں ایک میٹنگ کی۔ وزارت انصاف کے مطابق محکمہ انصاف سول ڈویژن کی کنزیومر پروٹیکشن برانچ کے ڈپٹی اسسٹنٹ اٹارنی جنرل ارون جی راو¿، کنزیومر پروٹیکشن برانچ اور ایف بی آئی کے ساتھیوں کے ساتھ، گزشتہ ہفتے نئی دہلی میں سی بی آئی حکام کے ساتھ سائبر سے متعلقہ مالیاتی جرائم اور بین الاقوامی کال سنٹر کے فراڈ سے نمٹنے کے طریقوں پر وسیع بات چیت کی۔

وزارت کے مطابق، میٹنگ میں اکتوبر 2021 میں آخری میٹنگ کے بعد سے، اس طرح کے جرائم سے نمٹنے کے لیے تعاون کو مسلسل مضبوط بنانے پر زور دیا گیا۔ ان طریقوں میں بھارت میں مبینہ مجرموں کی طرف سے انجام دیئے گئے کال سینٹر فراڈ کے واقعات، امریکی متاثرین کی گواہی کو محفوظ رکھنے کی کامیاب کوششوں کے ساتھ ہی شواہد کے تبادلے، بھارت میں مبینہ سائبر پر مبنی مالیاتی جرائم، عالمی ٹیلی مارکیٹنگ کے فراڈ میں ملوث افراد کی گرفتاری اور امریکی قانون نافذ کرنے والے اداروں کے ذریعے فراہم کردہ معلومات کے ذریعے شناخت کرنا شامل ہے۔

ہندوستھان سماچار


 rajesh pande