روپیہ ریکارڈ کم ترین سطح پر پہنچا ، ڈالر کے مقابلے بھارتی کرنسی 80.67 کی سطح پر آگئی
گزشتہ 6 ماہ میں آج انٹرا۔ ڈے ٹریڈنگ کے دوران سب سے بڑی کمی ریکارڈ کی گئی۔ نئی دہلی، 22 ستمبر (ہ س)۔
روپیہ ریکارڈ کم ترین سطح پر پہنچا ، ڈالر کے مقابلے بھارتی کرنسی 80.67 کی سطح پر آگئی


گزشتہ 6 ماہ میں آج انٹرا۔ ڈے ٹریڈنگ کے دوران سب سے بڑی کمی ریکارڈ کی گئی۔

نئی دہلی، 22 ستمبر (ہ س)۔

امریکی فیڈرل ریزرو کے ذریعہ سود کی شرح میں اضافے کے فیصلے کا ہندوستانی کرنسی روپے پر منفی اثر پڑا ہے۔ فیڈرل ریزرو کے فیصلے کے بعد آج روپیہ ڈالر کے مقابلے میں ریکارڈ کم ترین سطح پر پہنچ گیا۔

ڈالر انڈیکس کی مضبوطی کی وجہ سے ہندوستانی کرنسی آج 80.67 روپے فی ڈالر کی ریکارڈ کم ترین سطح پر پہنچ گئی ۔ ڈالر کے مقابلے روپے کی قدر میں گزشتہ 6 ماہ کی سب سے بڑی کمی آج انٹرا۔ ڈے ٹریڈنگ کے دوران ریکارڈ کی گئی۔ خدشہ ظاہر کیا جا رہا ہے کہ اگر امریکی معیشت میں جلد بحالی کے آثار نظر نہ آئے تو روپے کی گراوٹ 81 روپے کی سطح کو بھی عبور کر سکتی ہے۔

انٹر بینک فارن ایکسچینج مارکیٹ میں، روپیہ آج ڈالر کے مقابلے 31 پیسے کے خسارے کے ساتھ 80.29 پر کھلا۔ امریکی معیشت میں کساد بازاری کے خدشات نے آج پوری دنیا کی کرنسی مارکیٹ میں بھونچال مچا دیا ہے۔ فیڈرل ریزرو نے شرح سود میں اضافے سے امریکی معیشت کے کمزور ہونے کا خدشہ بڑھا دیا ہے۔ اسی وجہ سے ملکی اسٹاک مارکیٹ میں غیر ملکی سرمایہ کاروں کی زبردست فروخت کے باعث آج کرنسی مارکیٹ میں کاروبار کے آغاز سے ہی ڈالر کی مانگ مضبوط رہی۔

کرنسی مارکیٹ کے آغاز کے بعد جیسے جیسے دن کا کاروبار آگے بڑھتا گیا، روپے کی قدر میں گراوٹ بھی بڑھ گئی۔ ٹریڈنگ کے آغاز کے فوراً بعد روپیہ کمزور ہوکر 80.35 روپے فی ڈالر کی سطح پر آگیا۔ اس گراوٹ کے بعد کچھ عرصے کے لیے ڈالر کی مانگ میں کمی کے آثار بھی دکھائی دے رہے تھے جس کے باعث روپیہ 80.27 کی سطح پر آگیا تاہم یہ صورتحال زیادہ دیر برقرار نہ رہ سکی۔ ڈالر کی مانگ میں ایک بار پھر اضافہ ہوا جس کے باعث دوپہر 12 بجے تک بھارتی کرنسی ڈالر کے مقابلے 80.67 روپے کی سطح پر آگئی۔

ہندوستھان سماچار


 rajesh pande