وزیر خزانہ نے کہا، ہندوستان ڈیجیٹل ادائیگیوں میں دنیا میں سب سے آگے ہے۔
ڈیجیٹل ادائیگیوں کو مقبول بنانے میں ہندوستان کی کامیابی خوف کو دور کرتی ہے۔ نئی دہلی/ پونے، 22 ستمب
وزیر خزانہ نے کہا، ہندوستان ڈیجیٹل ادائیگیوں میں دنیا میں سب سے آگے ہے۔


ڈیجیٹل ادائیگیوں کو مقبول بنانے میں ہندوستان کی کامیابی خوف کو دور کرتی ہے۔

نئی دہلی/ پونے، 22 ستمبر (ہ س)۔ مرکزی وزیر خزانہ نرملا سیتا رمن نے کہا کہ ہندوستان میں ڈیجیٹل ادائیگی کے نظام کی کامیابی نے شکوک و شبہات کو غلط ثابت کر دیا ہے۔ سیتا رمن نے کہا کہ ہندوستان یو پی آئی ادائیگیوں کے معاملے میں دنیا میں سب سے آگے رہا ہے۔

وزیر خزانہ نے یہ بات جمعرات کو یہاں بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کے کارکنوں سے 'مودی راج کے 20 سال' پروگرام سے خطاب کرتے ہوئے کہی۔ نرملا سیتا رمن نے کہا کہ لاک ڈاؤن کے دوران ایک بٹن دبانے سے رقم لوگوں کے بینک کھاتوں میں پہنچ گئی۔ اگر وہ بینک نہیں جاسکتے تھے یا انہیں اس کی خبر نہیں ہوتی تھی تو بینک کے دوستوں نے گاؤں جاکر انہیں اپنی رقم دی تھی۔

انہوں نے کہا کہ ڈیجیٹل ادائیگی کس طرح کام کر سکے گی اس بارے میں بہت سے خدشات پیدا ہو گئے تھے۔ خاص طور پر دیہی علاقوں میں جہاں انٹرنیٹ کنیکٹیویٹی اچھی نہیں ہے۔ لیکن کورونا کی وبا کے باوجود ہندوستان یو پی آئی کی ادائیگیوں میں دنیا میں سب سے آگے رہا، جب کہ کچھ ترقی یافتہ معیشتیں چیک بنا کر لفافوں میں ڈال کر ڈاک کے ذریعے لوگوں کو بھیج رہی ہیں۔

سیتا رمن نے کہا کہ کچھ سال پہلے یو پی اے حکومت کے ایک وزیر نے کہا تھا کہ الیکٹرانک ادائیگیوں کو مقبول بنانا ناممکن ہے کیونکہ آپ سبزی فروش کو 7 روپے کیسے دیں گے وہ چلا گیا ہے۔


 rajesh pande