افسران انتہا پسندی اور مجرمانہ واقعات کو ہر صورت روکیں: وزیراعلیٰ
رانچی، 22 ستمبر (ہ س)۔ چیف منسٹر ہیمنت سورین نے کہا کہ ریاست میں امن و امان برقرار رکھنا حکومت کی او
افسران انتہا پسندی اور مجرمانہ واقعات کو ہر صورت روکیں: وزیراعلیٰ


رانچی، 22 ستمبر (ہ س)۔ چیف منسٹر ہیمنت سورین نے کہا کہ ریاست میں امن و امان برقرار رکھنا حکومت کی اولین ترجیح ہے۔ خاص طور پر حکام کو چاہیے کہ وہ انتہا پسندی اور مجرمانہ واقعات کو ہر وقت چیک کریں تاکہ خوف سے پاک ماحول کو برقرار رکھا جاسکے۔ سورین جمعرات کو سینئر پولیس حکام کی موجودگی میں تمام اضلاع کے ایس ایس پی-ایس پی کے ساتھ ایک اعلیٰ سطحی میٹنگ سے خطاب کر رہے تھے۔

وزیر اعلیٰ نے کہا کہ نکسل سے متاثرہ علاقوں بشمول بدھا پہاڑ، پارس ناتھ اور سرندا میں پولیس کی موجودگی میں کیمپ لگا کر گاؤں والوں کو حکومت کی اسکیموں کا فائدہ پہنچائیں۔ اس کے ساتھ یہاں بجلی، پانی، سڑکیں جیسی بنیادی سہولتیں مہیا کی جائیں۔ اس سے پولیس کے تئیں عوام کی ساکھ بڑھے گا اور عام لوگوں کے تعاون سے انتہا پسندی کے واقعات پر قابو پانے میں مدد ملے گی۔ پولس افسران نے وزیر اعلیٰ کو بتایا کہ سیکورٹی فورسز کے ذریعہ نکسل متاثرہ علاقوں میں شہری ایکشن پلان چلا کر لوگوں کو ضرورت کی اشیاء مسلسل فراہم کی جارہی ہیں۔

پولیس عسکریت پسندی سے متاثرہ علاقوں کے نوجوانوں کو روزگار سے جوڑنے میں تعاون کرے۔

وزیر اعلیٰ نے کہا کہ شورش سے متاثرہ علاقوں کو گاؤں والوں بالخصوص نوجوانوں کو روزگار سے جوڑ کر کافی حد تک روکا جا سکتا ہے۔ انہوں نے پولیس افسران سے کہا کہ وہ دیہی علاقوں میں تعینات سیکورٹی فورسز کو درکار اشیاء دیہاتیوں سے لے لیں۔ اس سے انہیں روزگار کے ساتھ ساتھ ان کی آمدنی میں بھی اضافہ ہوگا۔ وزیر اعلیٰ نے کہا کہ حکومت وقت پر اس کے لیے جو بھی ضرورت ہو گی فراہم کرے گی۔

شورش سے متاثرہ علاقوں میں سڑکوں، پل پلوں کی نقشہ سازی کروائیں۔

وزیر اعلیٰ نے کہا کہ اگر نکسل سے متاثرہ علاقوں میں سڑکیں اور پل بنانے کی ضرورت ہے تو ان کی مکمل نقشہ سازی کی جائے اور اس کی اطلاع حکومت کو دیں۔ اس کے بعد یہاں ایک پل اور سڑک بنانے کی پہل کی جائے گی، تاکہ نکسلیوں کے خلاف آپریشن میں سیکورٹی فورسز کو کسی قسم کی پریشانی کا سامنا نہ کرنا پڑے۔

تمام جیلوں میں ایک ماہ کے اندر جیمرز لگانے کی ہدایت

وزیر اعلیٰ نے کہا کہ جیلوں میں بند کئی مجرموں کی طرف سے موبائل یا دیگر ذرائع سے مجرمانہ وارداتیں کرنے کی مسلسل شکایات موصول ہو رہی ہیں۔ اسے ہر حال میں روکا جائے۔ وزیر اعلیٰ نے پولیس افسران کو واضح ہدایات دیں کہ ریاست کی تمام جیلوں میں جیمرز لگانے کا عمل ایک ماہ کے اندر مکمل کیا جائے۔

تہواروں کے موقع پر سیکیورٹی کے سخت انتظامات کیے جائیں۔

وزیراعلیٰ نے کہا کہ تہواروں کا سیزن چند دنوں میں شروع ہو رہا ہے۔ اس بار درگا پوجا بڑے پیمانے پر ہو رہی ہے جس میں بہت زیادہ ہجوم آنے کا امکان ہے۔ ایسے میں دسمبر تک پوری ریاست کو ہائی الرٹ پر رکھتے ہوئے سیکورٹی کے وسیع انتظامات کئے جائیں۔ امن اور ہم آہنگی برقرار رکھنے کے لیے پولیس تمام ضروری اور ٹھوس اقدامات کرے۔

اس موقع پر چیف سکریٹری سکھدیو سنگھ، چیف منسٹر کے پرنسپل سکریٹری راجیو ارون ایکا، ڈائرکٹر جنرل آف پولیس نیرج سنہا، چیف منسٹر کے سکریٹری ونے کمار چوبے اور ایڈیشنل ڈائرکٹر جنرل آف پولیس، انسپکٹر جنرل آف پولیس اور ڈپٹی انسپکٹر جنرل آف پولیس اعلیٰ افسران موجود تھے۔ ہندوستھان سماچار/سلام


 rajesh pande