محکمہ آبپاشی کا کلرک 40 ہزار روپے کی رشوت لیتے رنگے ہاتھوں گرفتار
بھوپال، 22 ستمبر (ہ س)۔ راجدھانی بھوپال میں لوک آیکت پولیس کی ٹیم نے محکمہ آبپاشی کولار کے ایگزیک
محکمہ آبپاشی کا کلرک 40 ہزار روپے کی رشوت لیتے رنگے ہاتھوں گرفتار


بھوپال، 22 ستمبر (ہ س)۔

راجدھانی بھوپال میں لوک آیکت پولیس کی ٹیم نے محکمہ آبپاشی کولار کے ایگزیکٹیو انجینئر آفس میں اسٹیبلشمنٹ برانچ انچارج (کلرک) کو 40 ہزار روپے رشوت لیتے ہوئے رنگے ہاتھوں گرفتار کیا ہے۔ لوک آیکت پولیس نے یہ کارروائی ایم پی نگر زون-1 میں واقع ملن ریسٹورینٹ میں کی۔ بتایا گیا ہے کہ ملزم نے متوفی ملازم کے بیٹے سے جی پی ایف اور دیگر ادائیگیوں کے لیے رشوت طلب کی تھی، شکایت ملنے کے بعد لوک آیکت پولیس نے منصوبہ بند کارروائی کی۔

لوک آیوکت پولیس کے مطابق جواہر چوک علاقہ میں رہنے والے سدھارتھ سکسینہ نے گزشتہ 20 ستمبر کو لوک آیکت کے ایس پی آفس میں ایک تحریری شکایت کی تھی، جس میں اس نے بتایا تھا کہ اس کی ماں نینا سکسینہ ایگزیکٹیو انجینئر الیکٹریکل میکینکس کولارروڈ بھوپال دفتر میں ٹریسر کے عہدے پر تعینات تھیں۔ جن کی موت جون 2021 میں ہوئی۔درخواست گزار نے بتایا ہے کہ اس کی والدہ نے سروس ریکارڈ میں درخواست گزار کو ہی نامنی بنایا ہے۔ جب درخواست گزار نے اپنی آنجہانی والدہ کے جی پی ایف اور دیگر مراعات کی ادائیگی کے لیے دفتر میں درخواست دی تو وہاں تعینات اسٹیبلشمنٹ انچارج جی کے پلئی نے ادائیگی کے عوض درخواست گزار سے 40,000 روپے رشوت طلب کی۔ لوک آیکت پولیس نے شکایت کی تصدیق کرائی اور شکایت کی تصدیق کے بعد ملزم کو رنگے ہاتھوں پکڑنے کا منصوبہ بنایا۔پلان کے مطابق شکایت کنندہ سدھارتھ سکسینہ نے جمعرات کے روز اسٹیبلشمنٹ انچارج جی کے پلئی (عمر 55 سال) کو ایم پی نگر زون-1 کے میلن ریسٹورنٹ میں بلایا اور جیسے ہی اس نے 40 ہزار روپے رشوت دی۔ اسی وقت لوک آیکت پولیس کی دس رکنی ٹیم نے چھاپہ مار کر اسے رنگے ہاتھوں گرفتار کر لیا۔ ملزمان کے خلاف کرپشن ایکٹ کے تحت مقدمہ درج کر لیا گیا ہے۔ فی الحال لوک آیکت کی کارروائی جاری ہے۔ اس کے گھر کی تلاشی بھی لی جارہی ہے۔

ہندوستھان سماچار/

/عطاءاللہ


 rajesh pande