اقوام متحدہ میں بھارت کا جواب،شرمناک ریکارڈ والے پاکستان کا اقلیتوں کے حقوق کی بات کرنا ستم ظریفی
نئی دہلی، 22 ستمبر (ہ س)۔ اقلیتوں کے حقوق کو لیکر اقوام متحدہ میں بھارت کو گھیرنے کی کوشش میں پاکست
اقوام متحدہ میں بھارت کا جواب،شرمناک ریکارڈ والے پاکستان کا اقلیتوں کے حقوق کی بات کرنا ستم ظریفی


نئی دہلی، 22 ستمبر (ہ س)۔

اقلیتوں کے حقوق کو لیکر اقوام متحدہ میں بھارت کو گھیرنے کی کوشش میں پاکستان کو ایسے پلٹ وار کا سامنا کرنا پڑا، جس نے اس کی بولتی بند کر دی۔ یو این ای ایس میں اقلیتی حقوق پر اقوام متحدہ کی میٹنگ میں بھارت کی طرف سے یو این ای ایس کے جوائنٹ سکریٹری شری نواس گوترو نے کہا کہ یہ ستم ظریفی ہے کہ اقلیتوں کے حقوق کی سنگین خلاف ورزی کی شرمناک تاریخ رکھنے والا پاکستان اقلیتوں کے حقوق کی بات کر رہا ہے۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان نے اپنے اقلیتوں کوختم کر دیا ہے۔ سکھ، ہندو، عیسائی اقلیتوں کے ساتھ ساتھ احمدیوں کے حقوق کی سنگین خلاف ورزیاں جاری ہیں۔ ایسی بہت سی کمیونٹیز ہیں جو معدومیت کی حالت میں ہیں۔ خواتین اور بچوں کی ایک بڑی تعداد، خاص طور پر اقلیتی برادریوں کی لڑکیوں کو اغوا، مذہب تبدیل اور زبردستی شادی پر مجبور کیا جا رہا ہے۔ ایسے میں شرمناک ریکارڈ والے پاکستان کا اقلیتوں کے حقوق کی بات کرنا شرمناک 'حیرت انگیز ہے۔ جبکہ ہندوستان میں اقلیتی بہبود کے لیے ایک خصوصی وزارت ہے جو مذہبی اور لسانی اقلیتوں کی دیکھ بھال کرتی ہے۔

دراصل پاکستان کے وزیر خارجہ بلاول بھٹو نے اقوام متحدہ میں دعویٰ کیا تھا کہ بھارت ایک ہندو ریاست میں تبدیل ہو رہا ہے اور مسلمانوں کے خلاف نفرت کے نظریے کی حوصلہ افزائی کی جا رہی ہے۔

ہندوستھان سماچار//محمد


 rajesh pande