کارتی چدمبرم کے سابق سی اے کی سی بی آئی تحویل میں تین دن کی توسیع
نئی دہلی ، 23 مئی (ہ س)۔ دہلی کی راوس ایونیو کورٹ نے چینی شہریوں کو ویزا دینے کے لیے رشوت لینے کے
کارتی چدمبرم کے سابق سی اے کی سی بی آئی تحویل میں تین دن کی توسیع


نئی دہلی ، 23 مئی (ہ س)۔

دہلی کی راوس ایونیو کورٹ نے چینی شہریوں کو ویزا دینے کے لیے رشوت لینے کے معاملے میں کارتی چدمبرم کے سابق سی اے ایس بھاسکر رمن کی سی بی آئی تحویل میں تین دن کی توسیع کر دی ہے۔ خصوصی جج ایم کے ناگپال نے تین دن کے لیے سی بی آئی کی حراست میں بھیجنے کا حکم دیا۔بھاسکر رمن کی سی بی آئی حراست آج ختم ہو رہی تھی ، جس کے بعد سی بی آئی کو عدالت میں پیش کیا گیا۔ سی بی آئی نے بھاسکر رمن کو 18 مئی کو گرفتار کیا تھا۔ سی بی آئی کے مطابق2011 میں ، مانسا کی تلونڈی سابو پاور لمیٹڈ (ٹی ایس پی ایل) نے بیل ٹولز لمیٹڈ کو 50 لاکھ روپے کی رقم ادا کی ، جس نے یہ رقم ایس بھاسکر رمن کو چینی ویزا کے لیے رشوت کے طور پر دی تھی۔

20 مئی کو ، کارتی چدمبرم کی پیشگی ضمانت کی درخواست پر سماعت کرتے ہوئے، عدالت نے سی بی آئی کو ہدایت دی تھی کہ کیا کارتی چدمبرم کی گرفتاری ضروری ہے۔ عدالت نے کارتی چدمبرم کو تحقیقات میں شامل ہونے کی ہدایت دی تھی۔ عدالت نے کارتی کو 24 مئی کو اپنے غیر ملکی دورے سے واپسی کے 16 گھنٹے کے اندر تفتیش میں شامل ہونے کی ہدایت دی تھی۔

سی بی آئی کے مطابق، 14 مئی کو پی چدمبرم کی رہائش گاہ کی تلاشی کے بعد مقدمہ درج کیا گیا تھا۔ کارتی چدمبرم پر 50 لاکھ روپے کی رشوت لینے کے بعد 250 چینی شہریوں کو غیر قانونی طور پر ویزا دینے کا الزام ہے۔ سماعت کے دوران سی بی آئی نے کہا کہ فی الحال کارتی کو گرفتار کرنے کی ضرورت نہیں ہے۔ تاہم اگر گرفتاری کی ضرورت پڑی تو وہ 48 گھنٹے کا نوٹس دے گی۔ اس پر عدالت نے ایجنسی کو تین دن پہلے کارتی کو نوٹس دینے کی ہدایت دی تھی۔

ہندوستھان سماچارمحمدخان


 rajesh pande