انکرا نے چوتھی سہ ماہی میں اقتصادی ترقی کی شرح 3.5 فیصد رہنے کی پیش گوئی کی
این ایس او مالی سال 2021-22 کی چوتھی سہ ماہی کا ڈیٹا 31 مئی کو جاری کرے گا نئی دہلی، 23 مئی (ہ س)۔
انکرا نے چوتھی سہ ماہی میں اقتصادی ترقی کی شرح 3.5 فیصد رہنے کی پیش گوئی کی


این ایس او مالی سال 2021-22 کی چوتھی سہ ماہی کا ڈیٹا 31 مئی کو جاری کرے گا

نئی دہلی، 23 مئی (ہ س)۔

روس یوکرین جنگ کے درمیان، گھریلو درجہ بندی ایجنسی انکرا نے مالی سال 2021-22 کی چوتھی سہ ماہی میں اقتصادی ترقی میں کمی کی پیش گوئی کی ہے۔ ریٹنگ ایجنسی نے کہا کہ چوتھی سہ ماہی (جنوری تا مارچ) میں ملک کی مجموعی گھریلو پیداوار (جی ڈی پی) 3.5 فیصد تک گرنے کا تخمینہ ہے، جو کہ تیسری سہ ماہی میں 5.4 فیصد تھا۔

ریٹنگ ایجنسی نے پیر کو جاری کردہ اپنی پیشین گوئی میں کہا ہے کہ مالی سال 2021-22 کی چوتھی سہ ماہی میں ملک کی جی ڈی پی کی شرح نمو 3.5 فیصد تک گر جائے گی۔ ریٹنگ ایجنسی انکرانے جنوری-مارچ 2022 کی سہ ماہی کے لیے اپنی اقتصادی ترقی کی پیشین گوئی میں کہا کہ چوتھی سہ ماہی میں ہندوستان کی جی ڈی پی کی شرح نمو 3.5 فیصد برقرار رہ سکتا ہے۔

انکرا کی چیف اکنامسٹ ادیتی نائر نے کہا کہ مالی سال 2021-22 کی چوتھی سہ ماہی کا وقت چیلنجنگ تھا۔ اس دوران کورونا کی تیسری لہر کی آمد کی وجہ سے اشیاء کی قیمتوں میں اضافے کی وجہ سے مارجن میں بھی کمی ہوئی۔ تاہم، انہوں نے کہا کہ پیٹرول اور ڈیزل پر مرکزی ایکسائز ڈیوٹی میں کمی سے کاروباری جذبات میں بہتری آئے گی اور صارفین کی ڈسپوزایبل آمدنی میں اضافہ ہوگا۔ اس کے ساتھ نائر نے کہا کہ صارف قیمت اشاریہ (سی پی آئی) پر مبنی افراط زر بھی نیچے آئے گا۔

ہندوستھان سماچار


 rajesh pande