Custom Heading

بڑی بہن نےکھانا میں دوا ملا کر چھوٹی بہن کی عصمت دری کی ویڈیو بنائی
اورنگ آباد، 14 مئی(ہ س)۔ اورنگ آباد میں بڑی بہن نے بھائی کے ساتھ چھوٹی بہن کی عصمت دری کروائ
بڑی بہن نےکھانا میں دوا ملا کر چھوٹی بہن کی عصمت دری کی ویڈیو بنائی


اورنگ آباد، 14 مئی(ہ س)۔

اورنگ آباد میں بڑی بہن نے بھائی کے ساتھ چھوٹی بہن کی عصمت دری کروائی ۔ یہی نہیں دونوں بہن بھائیوں نے مل کر اس کی ویڈیو بنائی اور وائرل کرنے کی دھمکی دے کر متاثرہ کو 4 سال سے عصمت دری کر تا رہا۔ 2022 میں نوجوان نے متاثرہ لڑکی کی فحش تصاویر اور ویڈیو بنا کر وائرل کر دیں۔ جب لڑکی کے ساتھ پہلی بار درندگی ہو ئی تو وہ نابالغ تھی۔ فی الحال دونوں بہن بھائیوں کے خلاف ایف آئی آر درج کرائی گئی ہے۔

معاملہ داؤد نگر تھانہ علاقہ کا ہے جہاں بھائی بہن کے مقدس رشتے کو شرمسار کرتے ہوئے ممیری بہن ( 18 سال) کی عصمت دری اور فحش ویڈیو بنانے کا سنسنی خیز معاملہ سامنے آیا ہے۔ متاثرہ کا تعلق جمہور تھانے کے تحت ایک گاؤں سے ہے۔

بڑی بہن نے کھانے میں دوائی ملا ئی ، بھائی نےکیا عصمت دری

لڑکی نے بتایا کہ 2018 میں وہ بیمار پڑنے پر دوا لینے داؤد نگر گئی تھی۔ اس وقت وہ نابالغ ( 14 سال) کی تھی۔ دوا خریدنے کے بعد لڑکی شام کو داؤد نگر میں اپنی نانی کے گھر چلی گئی۔ الزام ہے کہ رات کے کھانے میں ممیری بہن ( 20 سال) نے اسے کوئی نشہ آور چیز پلائی جس سے وہ بے ہوش ہوگئی۔ صبح جب میں اٹھی تو میں نے اپنے کمرے کے بستر پر اپنے ممیرے بھائی ( 25 سال) کو دیکھا۔

جب تک لڑکی کو کچھ سمجھ پاتی اس کے ممیرے بھائی نے اسے اپنے موبائل میں فحش تصاویر اور ویڈیوز دکھا کر وائرل کرنے کی دھمکی دی اور 5 دن تک اس کے ساتھ زیادتی کی ۔ ویڈیو وائرل ہونے کے ڈر سے لڑکی خاموش رہی اور اپنے گھر چلی گئی۔ 2020 میں تیج پر بھائی اپنی ماں کے لیے کپڑے لے کر اس کے گھر پہنچی ۔ بھائی کو وہاں دیکھ کر بہن چونک گئی۔ لیکن بھائی نے ایک بار پھر رشتے کو داغدار کیا اور ویڈیو کو وہاں بھی وائرل کرنے کی دھمکی دیتے ہوئے رات کو اس کی عصمت دری کی۔

4 سال تک عصمت دری کرتا رہا ، پھر وائرل کر دیا ویڈیو

28 اپریل 2022 کو ممیرا بھائی موٹر سائیکل سے لڑکی کے گھر پہنچا اور اس کی ماں کو بیمار ہونے کا کہہ کر داؤد نگر لے آیا۔ گھر میں کسی کو نہ ملنے پر لڑکی خوفزدہ ہوگئی اور ایک بار پھر اس کے ممیرے بھائی نے ویڈیو وائرل کرنے کی دھمکی دے کر زیادتی کی۔ لڑکی نے اس پر اعتراض کیا تو نوجوان نے اس کی پٹائی کی۔ لڑکی نے کسی طرح اپنے والد کو فون کرکے داؤد نگر بلایا۔ والد کے آنے کے بعد ممیرابھائی نے اسے بھی مارا پیٹا۔ اس کے بعد 29 اپریل 2022 کو نوجوان نے متاثرہ کی فحش تصویر اور ویڈیو اپنے موبائل سے وائرل کر دی۔

خاتون تھانے کی پولیس نے لڑکی کا 164 کا بیان درج کر کے اسے میڈیکل جانچ کے لیے صدر اسپتال لائی اور معاملے کی تفتیش کر رہی ہے۔ خاتون تھانہ انچارج کمکم نے بتایا کہ چھا پہ ماری کی جارہی ہے۔ ملزم اس وقت مفرور ہے۔ جلد ہی اسے گرفتار کر لیا جائے گا۔

ہندوستھان سماچار/ افضل/محمد


 rajesh pande