لڑکیوں سے انسٹاگرام پر دوستی کرکے بلیک میل کرنے والا ملزم گرفتار
نئی دہلی، 06 دسمبر (ہ س)۔ ضلع شاہدرہ کے سائبر تھانے نے ایک ایسے دیوانے کو گرفتار کر لیا ہے، جو انسٹا
لڑکیوں سے انسٹاگرام پر دوستی کرکے بلیک میل کرنے والا ملزم گرفتار


نئی دہلی، 06 دسمبر (ہ س)۔ ضلع شاہدرہ کے سائبر تھانے نے ایک ایسے دیوانے کو گرفتار کر لیا ہے، جو انسٹاگرام پر لڑکیوں سے دوستی کرتا تھا اور انہیں بلیک میل کر کے زبردستی رشتہ قائم کرتا تھا۔ ایسا نہ کرنے پر وہ ملزم لڑکیوں کی فحش ویڈیوز بنانے کے علاوہ ان پر تیزاب ڈالنے کی دھمکی بھی دیتا تھا۔

خوف کی وجہ سے کئی لڑکیاں اس سے مل چکی تھیں۔ گرفتار ملزم کی شناخت امر یادو کے نام سے ہوئی ہے۔ پولیس نے ملزم سے واردات میں استعمال ہونے والا موبائل برآمد کر لیا ہے۔ ملزم نے گزشتہ ڈیڑھ سال سے اپنے موبائل پر جعلی نام سے انسٹاگرام آئی ڈی بنا رکھی تھی۔ اس کے علاوہ، اس کی تقریباً 1100 لوگوں سے دوستی تھی، جن میں زیادہ تر لڑکیاں تھیں۔ پولیس گرفتار ملزمان سے پوچھ گچھ کر کے معاملے کی تفتیش کر رہی ہے۔

شاہدرہ ضلع کے ڈی سی پی آر ستیہ سندرم نے بتایا کہ 27 نومبر کو فرش بازار کی رہنے والی ایک لڑکی نے انہیں بلیک میلنگ کی شکایت دی تھی۔ متاثرہ لڑکی نے بتایا کہ چند روز قبل اسے انشیکا شرما 188 نامی انسٹاگرام آئی ڈی سے دوستی کی درخواست موصول ہوئی تھی۔ متاثرہ نے دوستی قبول کر لی۔ اس کے بعد متاثرہ نے اس کے ساتھ گپ شپ شروع کر دی۔

الزام ہے کہ ایک دن ملزم نے اسے کہا کہ وہ اس کی فحش تصاویر اور ویڈیو وائرل کرے گا۔ اگر وہ اس سے بچنا چاہتی ہے تو اسے اس کے ساتھ تعلقات رکھنا ہوں گے۔ اگر ایسا نہ ہوا تو اسے بدنام کرنے کے علاوہ اس پر تیزاب بھی ڈال دیں گے۔ واقعہ کے بعد متاثرہ خوفزدہ ہوگئی۔

متاثرہ کی شکایت پر پولیس نے مقدمہ درج کر کے تفتیش شروع کر دی۔ اسٹیشن انچارج اے سی پی سنجے کمار، ایس آئی شویتا اور دیگر کی ٹیم نے انسٹاگرام آئی ڈی کی جانچ کی۔ تفتیش کے دوران پولیس کو معلوم ہوا کہ جس انسٹاگرام آئی ڈی سے متاثرہ کو دھمکی دی گئی تھی وہ امن یادو نامی نوجوان نے بنائی تھی۔

ملزم سناتن دھرم مندر، سبھاش نگر، مغربی دہلی میں رہتا ہے۔ فوری طور پر ایس آئی شویتا اور دیگر کی ٹیم نے چھاپہ مار کر ملزم کو پکڑ لیا۔ دوران تفتیش پولیس نے ملزم سے واردات میں استعمال ہونے والا موبائل فون بھی برآمد کرلیا۔ پولیس کو پوچھ گچھ کے دوران ملزم نے بتایا کہ اس نے تقریباً ڈیڑھ سال قبل انسٹاگرام پر آئی ڈی بنائی تھی۔

لڑکیاں اس کا ہدف تھیں۔ وہ چند دنوں تک چیٹنگ کے بعد لڑکیوں کو بلیک میل کرتا تھا۔ وہ لڑکیوں کی تصاویر کے ساتھ چھیڑ چھاڑ کرتا تھا اور انہیں فحش بناتا تھا۔ بدنامی کے ڈر سے کئی لڑکیاں اس سے مل چکی تھیں۔

ہندوستھان سماچار


 rajesh pande