گپٹل نے ریٹائرمنٹ نہیں لی ، اب بھی کھیلنے کے لیے حوصلہ مند ہیں: کین ولیمسن
آکلینڈ، 24 نومبر (ہ س)۔ ہندوستان کے خلاف اپنی ٹیم کے پہلے ون ڈے سے قبل نیوزی لینڈ کے کپتان کین ولیمس

Guptil

آکلینڈ، 24 نومبر (ہ س)۔ ہندوستان کے خلاف اپنی ٹیم کے پہلے ون ڈے سے قبل نیوزی لینڈ کے کپتان کین ولیمسن نے جمعرات کے روز کہا کہ تجربہ کار اوپنر مارٹن گپٹل ان کی ٹیم کے لیے ایک بے مثال کھلاڑی رہے ہیں اور وہ اب بھی کھیلنے اور اپنے کھیل کو بہتر بنانے کے لیے پرعزم ہیں۔

ٹیم انڈیا جمعہ کے روز نیوزی لینڈ کے خلاف ون ڈے سیریز کا آغاز آکلینڈ کے ایڈن پارک میں پہلے ون ڈے سے کرے گی۔ ہندوستانی ٹیم نے اس سے قبل بارش سے متاثرہ تین میچوں کی ٹی۔20 سیریز 1-0 سے جیت لی ہے۔

ولیمسن نے میچ سے پہلے کی پریس کانفرنس میں کہا،”میں نے اس کے ساتھ کچھ بات چیت کی، وہ نیوزی لینڈ کے لیے بہترین رہے ہیں۔ انہوں نے دیگر لیگز میں کھیلنے کا فیصلہ کیا لیکن وہ اب بھی نیوزی لینڈ کے لیے دستیاب ہے۔ وہ یقینی طور پر ہمارے سفید گیند کے بہترین کھلاڑیوں میں سے ایک ہے۔ وہ ریٹائر نہیں ہوا ہے۔ وہ اب بھی کھیلتے رہنے اور بہتر ہونے کے لیے حوصلہ مند ہیں“۔

واضح ہو کہ نیوزی لینڈ کرکٹ (این زیڈ سی) نے بدھ کے روز تجربہ کار اوپنر مارٹن گپٹل کو ان کے سینٹرل کنٹریکٹ سے فارغ کر دیا ہے۔

36 سالہ اوپننگ بلے باز گپٹل 14 سالوں سے وائٹ بال کرکٹ میں نیوزی لینڈ کی بیٹنگ کے اہم ستون رہے ہیں، لیکن حال ہی میں ختم ہونے والے ٹی ۔20 ورلڈ کپ میں وہ نہیں کھیلے تھے، اور بھارت کے خلاف حالیہ ختم ہوئی ٹی۔20اور موجودہ ون ڈے سیریز کے لیے بھی منتخب نہیں کیا گیا تھا ۔

انہوں نے 47 ٹیسٹ میچوں میں نیوزی لینڈ کی نمائندگی کی اور 29.38 کی اوسط سے 2586 رن بنائے۔ اس فارمیٹ میں ان کے بلے سے تین سنچریاں اور 17 نصف سنچریاں ہیں، ان کا بہترین اسکور 189 ہے۔

گپٹل نے 198 ون ڈے میچوں کی 195 اننگ میں 41.73 کی اوسط سے 7346 رن بنائے ہیں۔ 237 ناٹ آو¿ٹ کے بہترین اسکور کے ساتھ ان کے نام 18 ون ڈے سنچریاں اور 39 نصف سنچریاں ہیں۔ اس کے علاوہ انہوں نے 122 ٹی ۔20 انٹرنیشنل میچوں میں 31.81 کی اوسط سے 3531 رن بنائے ہیں جس میں دو سنچریاں اور 20 نصف سنچریاں شامل ہیں۔ ٹی ۔20 میں ان کا سب سے زیادہ اسکور 105 رن ہے۔

آنے والی سیریز کے بارے میں، ولیمسن نے کہا کہ وہ اسے 2023 کے 50 اوور کے ورلڈ کپ کی تیاری نہیں کہیں گے، بلکہ سیریز پر توجہ مرکوز کریں گے۔

ولیمسن نے کہا کہ انہیں اب بھی تمام فارمیٹس میں کھیلنا اور ان کے درمیان تبدیلی کرنا پسند ہے۔

انہوں نے کہا کہ” میرے پاس ابھی بھی ایک کھلاڑی کی حیثیت سے بہتری لانے کا حوصلہ ہے“۔

اتنی بڑی تعداد میںٹی۔ 20 انٹرنیشنل میچوں کے بعد ون ڈے کھیلنے پر ولیمسن نے کہا کہ ٹیم کو اس فارمیٹ میں پھر سے وابستہ ہونے کی ضرورت ہے۔

اہم بات یہ ہے کہ بھارت اور نیوزی لینڈ کے درمیان 25 سے 30 نومبر تک تین میچوں کی ون ڈے سیریز کھیلی جائے گی۔ اس کے بعد نیوزی لینڈ کی ٹیم اگلے سال جنوری میں وائٹ بال سیریز کے لیے بھارت آئے گی۔

نیوزی لینڈ کی ون ڈے ٹیم :۔

کین ولیمسن (کپتان)، فن ایلن، مائیکل بریسویل، ڈیون کونوے، لوکی فرگوسن، میٹ ہنری، ٹام لیتھم، ڈیرل مچل، ایڈم ملنے، جمی نیشم، گلین فلپس، مچل سینٹنر، ٹم ساوتھی۔

ہندوستھان سماچار


 rajesh pande