राष्ट्रीय

Blog single photo

احمد آباد: شاہ نے دو فلائی اوور کا کیا افتتاح

30/11/2020

احمد آباد: شاہ نے دو فلائی اوور کا کیا افتتاح
 ٹریفک میں گھنٹوں کھڑا نہیں ہونا پڑے گا ، اس کی لاگت 71 کروڑ روپے ہے
احمد آباد ، 30 نومبر (ہ س)۔
 مرکزی وزیر داخلہ امت شاہ نے پیر کو دو فلائی اوور کی نقاب کشائی کی۔ اس سے احمد آباد میں ٹریفک کے مسئلے سے راحت ملے گی۔ ان دونوں فلائی اوور کی تعمیر پر 71 کروڑ روپئے لاگت آئی ہے۔
سرکھیج ۔گاندھی نگر شاہراہ پر سے گذرتے ہوئے پکوان چار راستے پر بہت زیادہ ٹریفک ہوتاتھا۔ فی الحال ، سب سے مصروف ترین سمجھے جانے والے جیجس بنگلہ روڈ اور سندھو بھون روڈ پر ٹریفک کے سبب مسافروں کازیادہ تر وقت یہاں ٹریفک پوائنٹ پر رکنا پڑتا تھا۔
مرکزی وزیر داخلہ شاہ نے آج صبح حکومت ہند کے سڑک ٹرانسپور اور قومی شاہ راہ وزارت اور گجرات حکومت کے سڑک اور تعمیر محکمہ کے تعاون سے احمد آباد میں 71کروڑ روپے   کی لاگت سے تیار دو فلائی اووروں کا افتتاح کیا۔ افتتاح کے وقت وزیر اعلیٰ وجے روپانی اور نائب وزیر اعلیٰ نیتن پٹیل بھی موجود تھے۔ان کے ساتھ ریوینیو وزیر کوشک بھائی پٹیل ریاستی وزیر داخلہ پردیپ سنگھ جڈیجہ ،شہر کی میئر بجل بین پٹیل رکن پارلیمنٹ ، ایم ایل اے اوردیگر عہدیدار موجود تھے۔
 سولااوور برج اب سیدھے اسکان اوور برج سے آسانی سے جا سکے گا۔ ایس جی ہائی وے پر دو سب سے بڑے ٹریفک پوانئٹ کو اوور پاس کیا جا سکتا ہے ۔ سر کھیج سے جلوڈا تک اوور برج منصوبہ ک حسے کے طور پر پہلا بڑا کام پورا ہو گیا ہے ۔ سرکھیج سے وشنودیوی سرکل تک بن رہے 6 اوور بر ج میں سے دو کا افتتاح کردیا گیا تاکہ جو لوگ سوراشٹر سے سیدھے گاندھی نگر جانا چاہتے ہیں انہیں بھی کافی راحت ملے گی۔ نہ صرف یہ بلکہ ان دو اوور برجوں کے کھلنے سے پبلک ٹرانسپورٹ سروس میں بھی وقت کی بچت ہوگی۔ احمدآباد میں سب سے زیادہ مصروف ایس جی ہائی وے سے ٹریفک کا بوجھ کم ہوگا۔
نائب وزیر اعلی نتن پٹیل نے اس موقع پر کہا کہ سوراشٹر سے احمد آباد ، قومی شاہراہ کو ملانے والی سڑک پہلے دو لین اور پھر چار لین تھی۔ اس سڑک پر ٹریفک بہت زیادہ تھا ۔ اس کی ابتدا اس وقت کے وزیر اعلی نریندر مودی نے کی تھی۔ تب تک ، اس کا تقریبا 70 فیصد کام مکمل ہو چکا تھا۔ پھر 2017 میں ایک خیال آیا کہ احمدآباد شاہراہ سے راجستھان ، دہلی تک سڑک پربھی بہت ٹریفک تھا۔ اس کے بعد ، اس سڑک کو چھ لین بنانے کا منصوبہ بنایا گیا تھا تاکہ طویل عرصے تک ٹریفک کے مسئلے کا درست حل ہو ۔ اس کے بعد ، اس پر کام شروع ہوا۔ کورونا کی وبا میں ، کارکنوں کو تیز رفتار سے بلا کر کام شروع کیا گیا تھا۔
 ہندوستھان سماچار


 
Top