राष्ट्रीय

Blog single photo

ڈاکٹر ہرش وردھن نے پرانی دہلی ریلوے اسٹیشن پر ماسک اور صابن تقسیم کیے

30/11/2020

نئی دہلی ، 30 نومبر ( ہ س)۔ مرکزی صحت اور خاندانی بہبود کے وزیر اور انڈین ریڈ کراس سوسائٹی (ای آر سی ایس) کے صدر ڈاکٹر ہرش وردھن نے پیر کے روز پرانی دہلی ریلوے اسٹیشن پر مسافروں ، ریلوے ملازمین ، کنٹریکٹ ملازمین اور کلیوں میں ماسک اور صابن تقسیم کیے۔
کورونا انفیکشن کے پیش نظر ماسک لگانے اور ہاتھ دھونے کی اہمیت پر زور دیتے ہوئے ، ڈاکٹر ہرش وردھن نے کہا کہ کووڈ۔19 کے خلاف جنگ میں ہمارا سب سے بڑا ہتھیار ماسک اور سینیٹائزر ہے۔ انہوں نے کہا کہ جلد ہی کووڈ کے ساتھ ہماری لڑائی کے 11 ماہ مکمل ہونے والے ہیں۔ تب سے اپنے آپ کو اور دوسروں کو محفوظ رکھنے کا سب سے اہم اصول صاف ۔صفائی اور جسمانی فاصلے کے بنیادی اصولوں پر عمل کرنا ہے۔
ڈاکٹر ہرش وردھن نے تقریب میں موجود تمام افراد کے ماسک لگانے پر خوشی کا اظہار کیا۔ انہوں نے کہا کہ ماسک اور صابن کی تقسیم کے پیچھے ایک بہت بڑا پیغام ہے۔ اس پیغام کو عام کرنا ہی مقصد ہے۔ انہوں نے کہا کہ حکومت مختلف چینلز اور سرگرمیوں کے ذریعے لوگوں میں شعور پیدا کرنے کی کوشش کر رہی ہے۔ اس کے نفاذ میں ، لوڈیڈ کیریئرز ، ٹیکسی یونین ، تھری وہیلر یونین بہت اہم کردار ادا کرتی ہیں۔
ہندوستان میں کوڈ کی صورتحال کے بارے میں ، ڈاکٹر ہرش وردھن نے کووڈ کے معیارات میں ہونے والی پیشرفت کی طرف توجہ مبذول کروتے ہوئے کہا کہ پوری دنیا میں سب سے زیادہ ریکوری ریٹ بھارت کا ہے۔ ہمارے پاس جنوری 2020 میں ایک لیب تھی اور اب ہمارے پاس 2165 لیبز ہیں۔ روزانہ کی بنیاد پر ایک ملین سے زیادہ افراد کی جانچ کی جا رہی ہے۔ آج ہم نے مجموعی طور پر 14 کروڑ تحقیقات مکمل کیں۔ یہ تمام چیزیں حکومت کی عزم اور ہمارے کورونا جانبازوں کی انتھک کوششوں کو ظاہر کرتی ہیں۔ اس وبا سے لڑنے میں کورونا جانبازوں کی شراکت داری اہم ہے۔
وزیر صحت و خاندانی بہبود نے کہا کہ وزیر اعظم نریندر مودی کی قابل ہدایت ہدایات سے ہندوستان ماسک ، پی پی ای کٹس ، وینٹیلیٹر وغیرہ بنانے میں خود کفیل ہوگیا ہے۔ بھارت میں روزانہ 10 لاکھ سے زیادہ پی پی ای کٹس تیار ہو رہی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ہمارے سائنس دان ویکسین کے تحقیقی کام میں مدد کررہے ہیں اور یہ ویکسین وقت پر دستیاب ہوگی۔
ہندوستھان سماچار


 
Top