खेल

Blog single photo

محمد سراج کے سر سے والد کا سایہ اٹھا

21/11/2020

نئی دہلی ، 21 نومبر (ہ س)۔ بھارتی ٹیم کے فاسٹ بولر محمد سراج کے والد محمدغوث کا جمعہ کی دیر رات حیدرآباد میں انتقال ہوگیا۔ غوثکی عمر 53 سال تھی اور وہ پھیپھڑوں کے مرض میں مبتلا تھے۔
سراج اس وقت ہندوستانی ٹیم کے ساتھ آسٹریلیائی دورے پر ہیں اور شاید وہ اس سیریز میں اپنا پہلا ٹیسٹ میچ کھیل سکتے ہیں۔ تاہم ، بایوببل کے قوانین کی وجہ سے سراج اپنے والد کی آخری رسومات کے لئے حیدرآباد واپس نہیں آسکیں گے۔
اس سے قبل انڈین پریمیر لیگ (آئی پی ایل) 2020 کے دوران کنگز الیون پنجاب کے بیٹسمین مندیپ سنگھ کے والد کابھی انتقال ہوگیا تھا ۔ وہ بھی بایوببل قوانین کے سبب اپنے والد کی آخری رسومات میں شرکت نہیں کرسکے تھے۔
واضح ہو کہ سراج کے والد آٹو ڈرائیور تھے اور انہوں نے اپنے بیٹے کو کرکٹر بنانے کے لئے اپنا سب کچھ داو¿ پر لگا دیا تھا۔ سراج اب ہندوستانی ٹیمکے ایک اہم رکن بھی ہیں ، لیکن بدقسمتی سے ان کے والد انہیں سفید کپڑوں میں ہندوستانی ٹیم کے لئے کھیلتے ہوئے نہیں دیکھ سکے۔
سراج کی آئی پی ایل ٹیم رائل چیلنجرز بنگلور نے اپنے ٹویٹر ہینڈل پر لکھا ، "ہماری دعائیں اور ہمدردی محمد سراج کے ساتھ ہیں ، جن کے والد کا انتقال ہو گیا ہے۔ اس مشکل وقت میں پورا آر سی بی کنبہ آپ کے ساتھ ہے۔ مضبوط رہو ، میاں“۔
ہندوستھان سماچار





 
Top